May 25, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/americanarmenianlegion.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253
FILE PHOTO: Spanish Prime Minister Pedro Sanchez attends a joint news conference with Brazil's President Luiz Inacio Lula da Silva, at Moncloa Palace in Madrid, Spain April 26, 2023. REUTERS/Juan Medina/File Photo

سپین کے وزیر اعظم پیڈرو سانچیز نے اسرائیل کی طرف سے حماس کے سات اکتوبر کے حملے کے جواب میں غیر متناسب اور متجاوز جوابی جنگی کارروائیوں نے مشرق وسطی میں خطرات بڑھا دیے ہیں۔ مشرق وسطی میں عدم استحکام کا سامنا ہے جبکہ پوری دنیا کو بھی اسرائیل کی غزہ میں جنگ کی وجہ سے سخت مضمرات کا سامنا کرنا ہو گا۔

سپین ان یورپی ملکوں میں سے ایک ہے جنہوں نے فلسطینی آزاد ریاست کے لئے عالمی سطح پر حمایت کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ جبکہ اسرائیل اس فلسطینی ریاست کی تصور کا بد ترین مخالف ہے۔ سانچیز نے پچھلے دنوں اردن، قطر اور سعودی عرب کے دورے کئے ہیں۔انہوں نے ان دوروں کے دوران ایک سے زائد بار یہ عندیہ دیا ہے کہ سپین فلسطینی ریاست کو تسلیم کر سکتا ہے۔

سانچیز نے بدھ کے روز اپنے ملک کے قانون سازوں سے خطاب میں کہا ‘بین الاقوامی برادری کی طرف سے فلسطینیوں کی حمایت کا زبانی کلامی حمایت کا کچھ فائدہ نہیں جب تک فلسطینیوں کی آزاد ریاست کو تسلیم نہیں کیا جاتا۔

سپین کے وزیر اعظم نے پچھلے ماہ آئر لینڈ، مالٹا اور سلووینیا کے کےساتھ ایک اعلامیہ پر دستخط کیے ہیں کہ فلسطینی ریاست کو تسلیم کیا جائے گا۔ سپین کی حکومتی ترجمان کے پیلار الیگریا کے مطابق وزیر اعظم پیڈرو سانچیز اگلے ہفتے سے یورپی یونین کے دوسرے ارکان سے بھی فلسطینی ریاست کو تسلیم کرنے لئے ملاقاتیں کریں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *