April 21, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/americanarmenianlegion.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253
أسود lions

بھارت میں دائیں بازو کی ہندو جماعت وشوا ہندو پریشد نے محکمہ جنگلات اور سفاری پارک کی انتظامیہ کے خلاف مقدمہ کی درخواست دے دی۔

اطلاعات کے مطابق مغربی بنگال ریاست کے سفاری پارک میں ‘اکبر’ نامی نر شیر اور ‘سیتا’ نامی مادہ شیر کی جوڑی لائی گئی اور انہیں ایک پنجرے میں رکھا گیا۔

ہندو جماعت نے شیر کے جوڑے کے ناموں پر اعتراض کرتے ہوئے جوڑی کے ایک ہی پنجرے میں ساتھ رہنے پر بھی برہمی کا اظہار کیا۔

مذکورہ جماعت نے اس معاملے پر پہلے مقامی تھانے اور پھر عدالت میں ایک درخواست دائر کر دی جس میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ ہندوؤں کی مقدس ہستی سیتا پر شیرنی کا نام رکھا گیا اور اسے نر شیر اکبر کے ساتھ رکھا گیا۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ اکبر مغل بادشاہ تھا جس کا دھرم الگ تھا۔ اکبر کے ساتھ سیتا کی جوڑی بنائی گئی جس سے ہندوؤں کے جذبات کو ٹھیس پہنچی ہے۔ سیتا کو اکبر سے علیحدہ کیا جائے یا نر شیر کا نام تبدیل کیا جائے۔

اس درخواست کی سماعت 20 فروری کو کولکتہ ہائی کورٹ میں کی جائے گی۔

دوسری جانب محکمہ جنگلات کا کہنا ہےکہ شیر کی جوڑی کو حال ہی میں تریپورہ کے زولوجیکل پارک سے یہاں منتقل کیا گیا تھا اور اس جوڑی کا نام پہلے سے ہی رکھا ہوا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *