April 14, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/americanarmenianlegion.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253
Rahul Gandhi, a senior leader of India’s main opposition Congress party, addresses the media in New Delhi, India. (File photo: Reuters)

لوک سبھا کے انتبخابات میں بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی جماعت بھارتیہ جنتا پارتی کی اہم ترین مد مقابل کانگریس کے بنک اکاؤنٹس کو جمعہ کے روز منجمد کر دیا گیا ہے۔ عین انتخابی مہم کے دوران سب سے بڑی اپوزیشن جماعت کے اکاؤننٹس منجمد کیے جانے کا واقعہ بھارت میں اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ ہے۔

یہ اکاؤنٹس منجمد کرنے کی وجہ دو ارب دس کروڑ کی رقم کے ٹیکسوں کا تنازعہ بتایا گیا ہے۔ عین اس وقت جب انتخابی مہم جاری ہے اور موثر انتخابی چلانے کے لیے ہر سیاسی جماعت کو وسائل کی ضرورت ہوتی ہے کانگریس کی طرف سے اس کارروائی کو بھارت میں جمہوریت پر سنگین وار قرار دیا جارہا ہے۔

انکم ٹیکس ٹربیونل کے حوالے سے البتہ بتایا گیا ہے کہ کانگریس جزوی طور پر ااپنے بنک اکاؤنٹس کو فعال رکھ سکے گی۔ مگریہ سہولت محدود ہوگی۔ یعنی صرف 21 فروری تک ہو گی۔ واضح رہے کیس کی سماعت 21 فروری کو ہی دوبارہ ہو گی۔

بھارت کو دنییا میں بڑئی جمہوریت کہا جات ہے۔ مگر اس کے ناقدین کی تعداد حالیہ برسوں میں بڑھتی جارہی ہے۔ ایک وجہ اقلیتوں کےساتھ مودی سرکار کے دور میں ہونےوالے واقعات ہیں تو دوسری جانب مخالفین حتیٰ کے تنقید کرنے والے میڈیا کے لیے بھی بھارت میں جگہ کم ہوتی گئی ہے۔ اگر یہ سلسلہ اسی طرح جاری رہا تو بھارتی جمہوریت صرف آبادی زیادہ ہونے کی وجہ سے ہی بڑی سمجھی جائے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *